شفافیت
 شفافیت
 
ہم آہنگی
 ہم آہنگی
 
پیسٹ سے پاک علاقے
 پیسٹ سے پاک علاقے
مساوات
 مساوات
 
غیر امتیازی
 غیر امتیازی
 
تکنیکی جواز
 تکنیکی جواز

ایس پی ایس معاہدہ رکن ممالک سے ان کے فیصلہ سازی کے عمل میں شفاف ہونے کا تقاضا کرتا ہے ۔ شفافیت کا مطلب یہ ہے کہ تمام متعلقہ دستاویزات اور پالیسیوں میں تبدیلیوں کو دوسرے رکن ممالک کے لئے با آسانی دستیاب بنایا جانا ضروری ہے ۔ یہ ممالک کو نباتاتی حفظان صحت کارروائیوں کے جواز کو سمجھنے اور ان پر اپنی رائے فراہم کرنے کی اجازت دیتا ہے ۔

شفاف: بین الاقوامی سطح پر، نبا تا تی حفظانِ صحت کی تدابیر اور ان کے منا طق کی دستیابی کا اصول۔ (ماخذ: آئی ایس پی ایم ۵)

ہم آہنگی کا مقصد ہر ممکن حد تک وسیع پیمانے پر حفظان صحت اور نباتاتی حفظان صحت کے اقدامات کو یکساں معیار کے مطابق بنانا ہے ۔ اس مقصد کا حصول اس وقت ہوتا ہے جب ممالک ، سرکاری طور پر تسلیم شدہ معیارات مقرر کرنے والی تنظیموں ، جیسے کہ آئی پی پی سی ، کی جانب سے فراہم کئے گئے بین الاقوامی معیارات کی پیروی کرتے ہیں ۔ اس وقت ، آئی پی پی سی نے بہت سے کماڈتی کے لحاظ سے مخصوص معیارات تشکیل نہیں دیئے ہیں ، اور اس لئے ، زیادہ تر ممالک نباتاتی کموڈٹیز کے لئے مارکیٹ تک رسائی کے لئے فیصلے پیسٹ رسک اینالیسس کی بنیاد پر کرتے ہیں ۔

پیسٹ سے پاک علاقوں کو تسلیم کرنے کا یہ اصول رکن ممالک کو ایک ملک کے پیسٹ سے پاک علاقے سے تجارت میں شامل کرنے کی اجازت دیتا ہے جو کہ دوسری صورت میں ایک متاثرہ ملک ہے ۔ پیسٹ سے آزادی کا ثبوت عوامل کے ذریعے فراہم کیا جاسکتا ہے جیسے کہ ماحول / ایکو سسٹم ( مثال کے طور پر ، پیسٹ کو زندہ رکھنے کے لئے بہت سرد یا بہت گرم ) ، سرویلینس ، اور نباتاتی حفظان صحت کے کنٹرولز کی افادیت ۔

مساوات کے اصول کے تحت ، برآمد کرنے والا ملک نباتات کی صحت کے موجودہ اقدامات کے لئے اس وقت ایک متبادل عمل پیش کر سکتا ہے جب یہ ثابت کیا جاسکتا ہو کہ متبادل اقدام اتنا ہی مؤثر ہے ۔

یہ اصول درآمد کرنے والے ممالک سے رسک مینجمنٹ اور مارکیٹ تک رسائی کے فیصلوں کی بنیاد من مانے عوامل پر نہیں بلکہ تجزیہ کئے گئے خطرے کی بنیاد پر کرنے کا تقاضا کرتا ہے ۔ جب کہیں ایک جیسے پیسٹس سے ایک جیسے خطرات کی صورتحالوں کا سامنا ہو تو مختلف اقدامات کا تقاضا کرتے ہوئے ، درآمد کرنے والے ممالک کو تجارتی شراکت داروں کے درمیان کبھی بھی غیر منصفانہ طور پر امتیاز نہیں کرنا چاہیئے ۔

ایس پی ایس معاہدے اور آئی پی پی سی کے اصولوں کی ایک بنیادی شرط یہ ہے کہ کسی بھی اقدام کو پیسٹ رسک اینالسس ( پی آر اے ) یا دوسری سائینسی اسسمنٹ سے قابل جواز ہونا چاہیئے ۔ اقدامات کی بنیاد سائنس پر ہونا یہ یقینی بناتا ہے کہ نباتاتی حفظان صحت کی شرائط نباتات کی صحت کی وجوہات کے لئے ضروری ہیں اور ناجائز طور پر تجارت میں رکاوٹ کا سبب نہیں بنتیں ۔